Brick Instructions and Fraud in its Purchase

گھر بنانے کے لئے اینٹ کا بنیادی کردار ہوتا ہے۔ اس لئے اس کی ڈیمانڈ زیادہ ہے اور سپلائی کی کمی کو اور زیادہ منافع کے لالچ میں اینٹ کےاکثر سپلایرز یا بھٹہ مالکان مندرجہ ذیل فراڈ کرتےہیں۔


عموماً اینٹ 9 انچ (لمبائی) کی ہوتی ہے ۔ لیکن اکثر اینٹ 9 کی بجائے 8.5 یا 8.75 انچ کی ہوتی ہے جبکہ پیسے 9 انچ کے لیےجاتے ہیں۔ اینٹ چھوٹی ہونے کی وجہ سے زیادہ لگتی ہے ۔ مثال کے طور پر 5 مرلہ کا ڈبل سٹوری مکان میں اگر 60 ہزار اینٹ لگنی ہے تو اینٹ چھوٹی ہونے کی وجہ سے 2.5 ہزار اینٹ زیادہ لگے گی۔ آج کے ریٹ کے مطابق آپ کو اس دھوکہ کی وجہ سے 30 ہزار کا نقصان ہو جائے گا ۔ اس لیئے اینٹ خریدنے سے پہلے تسلی کرلیں اور اگر کسی جگہ سے آپ کو مارکیٹ ریٹ سے کم پر اینٹ مل رہی ہو تو تب بھی چیک کر لیں کہ کہیں اینٹ چھوٹی تو نہیں۔


اینٹ کی دو اقسام ہیں اول اینٹ اور دوم اینٹ ۔ دونوں میں فرق کوالٹی کا ہوتا ہے۔ اس لیے دوم اینٹ 2 سے 3 روپے سستی ہوتی ہے۔ اول اینٹ کو چیک کرنےکے لیب ٹیسٹ ہوتے ہیں جسمیں سب سے مشہور ٹیسٹ یہ ہے کہ اینٹ کا وزن کر کے اسکو پانی میں رکھ دیا جاتا ہے اور پھر وزن کیا جاتا ہے ۔ اگر وزن 15% کے قریب بڑھ جائے تو قابلِ قبول ورنہ زیادہ کی صورت میں ٹیسٹ فیل کر دیا جاتا ہے ۔ اگر خود سے چیک کرنا ہو تو 2 اینٹوں کو آپس میں ٹکرانے سے ” ٹن” کی بھر پور آواز آنی چاہیئے اگر ایسا ہے تو اس کا مطلب کہ اینٹ کی پکائی ٹھیک ہے اور اندر سے کچی نہیں ہے ۔ اس کے علاوہ اینٹ ہر طرف سے سیدھی ہو کہیں سے بھی ٹیڑھا پن نہیں ہونا چاہیے۔ اینٹ ٹھوس ہو اور اوپر والی سطح بھر بھری نہیں ہونی چاہیئے ۔ اگر یہ علامات موجود ہیں تو اینٹ اول کوالٹی کی ہے وگرنہ دوم اینٹ ہے ۔ اگر بنیاد کے علاوہ گھر بنانے میں دوم اینٹ کا استعمال کررہے ہیں تو بہت بڑا خطرہ مول لے رہے ہیں ۔ جب آپ اینٹ خریدتے ہیں تو اول اینٹ کے ساتھ 10 سے 15% اینٹ دوم کی شامل کردی جاتی ہے اور ایک عام بندے کو اس فراڈ کا احساس تک بھی نہیں ہو پاتا۔


جب گھر بنتا ہے تو بہت زیادہ اینٹ کی ضرورت ہوتی ہے ۔ عموماً 4 ہزار اینٹ کی ایک ٹرالی ہوتی ہے۔ کیا واقعی یہ تعداد پوری ہوتی ہے؟. اکثر ایسا ہوتا ہے کہ تعداد 4 ہزار میں سے 100 سے 200اینٹ کم ہوتی ہے ۔ اور خریدار کو پتہ بھی نہیں چلتاکہ مکمّل گھر بنوانے میں اسکو 20 سے 30 ہزار کا مزید نقصان ہو گیا ہے ۔ گھر کی دیواریں بنواتے وقت جو اینٹ استعمال ہوتی ہے اس کی پانی سے ترائی بہت زیادہ ضروری ہے ۔ جتنی زیادہ اینٹ میں نمی ہوگی اتنی زیادہ مسالحے کی پکڑ ہوگی اور دیوار لوہے کی طرح مظبوط بنے گی۔ مگر مستری اور لیبر اپنا وقت بچاتے ہیں اور اینٹ کی ترائی میں ڈنڈی مارتے ہیں نتیجتاً دیوار کمزور بنتی ہے۔ اس لئے کوشش کریں کہ اینٹ کی ترائی خود اپنی نگرانی میں کروائیں اور اینٹ کو خشک نہ ہو نے دیں۔ سردیوں کا موسم چنائی کے لئے اچھا ہو تاہے۔ کیونکہ پانی کم لگانا پڑتا ہے اور مصالحے کی پکڑ بہت اچھی ہوتی ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.